Mera Pakistan

میرا پاکستان

ابھی بیانات کا شور تھما نہ تھا کے ایک اور کارنامہ سرانجام دے دیاگیا۔ کلیریکل میسٹیک کے نام پرارے صاحب جانے بھی دوقوم کا ٹمپریچر ماپنے کے اور بھی طریقے ھیں۔اور ویسے بھی اب قوم کہاں ایک ہجوم ھے جس کا کام آوے ای آوے اور جاوے ای جاوے کے نعرے لگانا رہ گیا ھے۔افسوس کرنا بھینس کے آگے بین بجانے کے مترادف ھے۔اتنے معصوم ارکان پارلیمنٹ قیام پاکستان سے اب تک نہیں آےجو بن پڑھے صرف دستخط کا شوق رکھتے ھوں۔اقرارنامےاور حلف کا مطلب سمجھنے سےعاری ہوں۔ بازارسے دودھ پینے والے کو تحفظ رسالتﷺ کے لیے جھنجوڑنا پڑے د ین کے ٹھیکےداروں کو۔دو دن کے طوفان بتمیزی اورطاقت کے گھمنڈ میں ملکی قانون کی بینیادوں سے کھیلنے کے بعداس ایک لفظ (کلیریکل میسٹیک) پرمورخ تو جو لکھےگا بعدکی بات سہی۔کوئی شرم اورکوئی حیا یہ لفظ اب اپنے بولنے والوں پرقہقھے لگا رہا ھے۔وقت کا چکربڑا بے رحم ھے کسی کو معافی نہیں دیتا تاریخ گواہ ھےجس جس نے طاقت پربھروسہ کیا۔  آ خراپنے ھی کھودے گڑھے میں دفن ھوگیا۔      

خدا کرے کہ مری ارضِ پاک پر اترے
وہ فصلِ گل جسے اندیشۂ زوال نہ ہو
0321-7254695   
ڈاکٹرخالد لطیف

Category(s): Knowldge

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *